صرف نیوز ہی نہیں حقیقی ویوز بھی

تھانے: مڈڈے میل کھانے سے ۱۰۰؍سے زائد طلبہ بیمار،۴؍افراد کے خلاف ایف آئی آر

89,753

مہاراشٹر کے تھانے ضلع میں کے پرائیویٹ آشرم اسکول کے ۱۰۰؍ سے زائد طلبہ مڈڈے میل کھانے کے ایک دن بعد فوڈ پوائرننگ کا شکارہو گئے ہیں۔ اس معاملے میں پولیس نے ۴؍ افراد کے خلاف ایف آئی آر درج کی ہے۔ شاہ پور تحصیلدار کو مل ٹھاکر نے بتایا کہ بدھ کو فوڈ پوائزننگ کا شکار ہونے کے بعد کل ۱۱۷؍ طلبہ بشمول ۴۸؍ طالبات کو شاہ پور سب ڈسٹرکٹ اسپتال داخل کیا گیا تھا

مہاراشٹرا کے تھانے ضلع میں ایک پرائیویٹ آشرم اسکول کے ۱۰۰؍ سے زائد طلبہ مڈڈے میل کھانے کے ایک دن بعد فوڈ پوائزننگ کا شکار ہوگئے ہیں۔ اس معاملے میں پولیس نے جمعرات کو ۴؍افراد کے خلاف ایف آئی آر درج کی ہے۔شاہ پور تحصیلدار کو مل ٹھاکر نے خبر رساں ایجنسی پی ٹی آئی کو بتایا کہ بدھ کو فوڈ پوائزننگ کا شکار ہونے کے بعد کل۱۱۷؍ طلبہ بشمول ۴۸؍ طالبات کو شاہ پور سب ڈسٹرکٹ اسپتال میں داخل کیا گیا تھا۔ سنت گاڈگے مہاراج پرائمری اینڈ سیکنڈری آشرم اسکول (جو آبائی بچوں کیلئے رہائشی اسکول ہے)، جہاں یہ واقعہ پیش آیا، ممبئی کے مضافات میں شاہ پور تعلقہ کے بھٹسائی میں واقع ہے۔کومل ٹھاکر نے کہا کہ اسکول میں پہلی سے دسویں جماعت کے ۲۹۰؍ طلباء ہیں اور ان میں سے ۱۶۸؍، بدھ کو موجود تھے، کویہ کھانا دیا گیا تھا۔ ایک عہدیدار نے بتایا کہ طلبہ کو کھانا (پلاؤ) اور ایک میٹھی ڈش (گلاب جامن) پیش کی گئی تھی جس کےبعد انہیں قے اور فوڈ پوائزننگ کی دیگر علامات کا سامنا کرنا پڑا۔ بعد ازیں انہیں فوری طور پر اسپتال لے جایا گیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ یہ کھانا بھٹسائی کے ایک دیہاتی کی پہلی برسی کے موقع پر باہر سے لایا گیا تھا۔ضلع دیہی پولیس کنٹرول روم کے ایک اہلکار نے بتایا کہ اس معاملے میں اسکول سپرنٹنڈنٹ، پرائمری اسکول کی ہیڈ مسٹریس، سیکنڈری اسکول کے ہیڈ ماسٹر اور باہر سے کھانا لانے والے ایک شخص کے خلاف تعزیرات ہند کی دفعہ ۲۸۴؍ (زہریلے مادے کو لاپرواہی یا لاپرواہی سے سنبھالنا، انسانی زندگی کو خطرے میں ڈالنا)، ۳۳۶ ؍(کوئی ایسا کام کرنا جس سے انسانی زندگی یا دوسروں کی ذاتی حفاظت کو خطرہ ہو)، ۳۳۷ ؍(کسی فعل کے ارتکاب سے کسی بھی شخص کو تکلیف پہنچانا) کے تحت مقدمہ درج کیا گیا ہے۔ جلد بازی یا لاپرواہی سے، انسانی زندگی یا دوسروں کی حفاظت کو خطرے میں ڈالنا) اور ۳۴؍ (مشترکہ ارادہ) مقدمہ درج کیا گیا ہے۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.