صرف نیوز ہی نہیں حقیقی ویوز بھی

ترنگے کی چھائوں میں

514

پروفیسر جمیل کامل

لاکھوں ہوئے شہید تو یہ عید آئی ہے

کتنے جتن سے دیش نے آزادی پائی ہے

احساس یہ جگائو ترنگے کی چھائوں میں

سب کو گلے لگائو ترنگے کی چھائوں میں

ذیشان پھر جہان میں ہندوستان ہو

ہو شانتی وطن میں تو جنت نشان ہو

شان وطن بڑھائو ترنگے کی چھائوں میں

سب کو گلے لگائو ترنگے کی چھائوں میں

تہذیب گنگا جمنی ہے بھارت کی جان لو

گنگ و جمن سا مل کے رہیں دل میں ٹھان لو

تاریخ یوں رچائو ترنگے کی چھائوں میں

سب کو گلے لگائو ترنگے کی چھائوں میں

الفت کے اس چمن میں محبت کے گل کھلیں

تعلیم عام ہو تو ہر اک گام منزلیں

پھر سے جہاں پہ چھائو ترنگے کی چھائوں میں

سب کو گلے لگائو ترنگے کی چھائوں میں

کھائیں قسم کہ اب نہ کہیں بستیاں جلیں

نفرت کی اب کبھی نایہاں آندھیاں چلیں

چاہت کے گل کھلائو ترنگے کی چھائوں میں

سب کو گلے لگائو ترنگے کی چھائوں میں

پُرکھوں کے سارے خوابوں کو ساکار کیجیے

انسانیت کا پیار کا ویوہار کیجیے

سب بھولیں بھید بھائو ترنگے کی چھائوں میں

سب کو گلے لگائو ترنگے کی چھائوں میں

آئو خوشی منائو ترنگے کی چھائوں میں

سب کو گلے لگائو ترنگے کی چھائوں میں

صدر ہندی ،اردو،مراٹھی سنگم (ہم)

9987043430

Leave A Reply

Your email address will not be published.