صرف نیوز ہی نہیں حقیقی ویوز بھی

مہنگائی کے ایک تحفہ کے ساتھ مودی حکومت ریلوے سفر کو مزید مشکل بنانے جارہی ہے

64,766

نئی دہلی : ریلوے سے سفر کرنے کیلئے اب آپ کو زیادہ پیسے خرچ کرنے پڑسکتے ہیں ۔ ریلوے بورڈ چیئرمین اور سی ای او ونود کمار یادو نے جانکاری دی ہے کہ ائیر پورٹس کیلئے وصول کئے جارہے یوزر چارج کی طرح کچھ ریلوے اسٹیشنوں پر بھی یوزر چارج وصول کیا جائے گا ۔ اسی دوران نیتی آیوگ سی ای او امیتابھ کانت نے کہا کہ پرائیویٹ ٹرینوں کا کرایہ مارکیٹ کے حساب سے طے کیا جائے گا ۔ پیسنجرس کو ویلیو ایڈیڈ سروسز بھی مہیا کرائی جائیں گی ۔

ریلوے نے آج اعلان کیا کہ کل ریلوے اسٹیشنوں کے 10 سے 15 فیصدی اسٹیشنوں پر یوزر چارج وصول کیا جائے گا ۔ سی آر بی اور سی ای او نے جانکاری دی ہے کہ 1050 اسٹیشنوں پر مسافروں کا فٹ فال بڑھایا جائے گا ۔ فٹ فال بڑھنے سے اسٹیشنوں کی صلاحیت بڑھانے کیلئے اس کی از سر نو تعمیر کی جائے گی ۔ ان اسٹیشنوں میں یوزر چارج لیا جائے گا ۔ ملک میں ہندوستانی ریلوے کے تقریبا سات ہزار ریلوے اسٹیشنز ہیں ۔

سی آر بی وی کے یادو نے جانکاری دی ہے کہ یوزر چارج کیلئے ریلوے جلد ہی نوٹیفکیشن جاری کرے گا ۔ حالانکہ یوزر چارج کتنا ہوگا ، اس سوال پر انہوں نے کہا کہ ایک چھوٹی رقم یوزر چارج کے طور پر لی جائے گی ۔ ریلوے نے جانکاری دی ہے کہ بڑے ریلوے اسٹیشنوں اور بھیڑ بھاڑ والے ریلوے اسیٹیشنوں پر یوزر چارج وصول کیا جائے گا ۔ یہ یوزر چارج ٹکٹ کرایہ میں جوڑ کر مسافروں سے وصول کیا جائے گا ۔

ریلوے بورڈ کے چیئرمین نے کہا کہ مارچ 2024 تک ہائی ڈینسٹی روٹس پر ڈبلنگ ، ٹرپلنگ اور الیکٹریفکیشن کا کام پورا کرلیں گے ۔ انہوں نے بتایا کہ گاندھی نگر اور حبیب گنج ریلوے اسٹیشن دسمبر 2020 تک ری ڈیولپ ہوجائیں گے ۔

اس پریس کانفرنس میں نیتی آیوگ سی ای او امیتابھ کانت بھی شامل رہے ۔ کانت نے کہا کہ پرائیویٹ ٹرینوں کا کرایہ مارکیٹ کے حساب سے طے کیا جائے گا ۔ مسافروں کو ویلیو ایڈیڈ سروسز بھی مہیا کرائی جائیں گی ۔ پرائیویٹائزیشن سے ریلوے کو تقریبا 30 ہزار کروڑ روپے کے نجی سرمایہ کاری کی امید ہے ۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.