صرف نیوز ہی نہیں حقیقی ویوز بھی

علمائے کرام وارثین انبیاء ہیں، ساری انسانیت ان کی مخاطب ہے : الیاس خان فلاحی

72,990

 مایوس اورمرعوب ہوکریہ ملت اپنی منصبی ذمہ ادا نہیں کر سکتی۔ ڈاکٹر سلیم خان، معاون امیر، جماعت اسلامی حلقہ مہاراشٹر

   وقتی،ہنگامی اور جزوی کاموں کے بجائے ہم مسلم معاشرہ کی اصلاح اور برادران ِوطن تک دین کا پیغام پہنچانے پر اپنی قوتیں صرف کریں۔ محمد نصیر اصلا حی،ناظم اعلیٰ، مجلس العلماء تحریک اسلامی مہاراشٹر  

ممبئی: حالات کتنے  ہی سخت اور نا خوشگوار ہوں علماء کرام کو پورے عزم و حوصلہ کے ساتھ اپنی ذمہ داریاں ادا کرنا ہے۔ دعوت حق کے راستے میں آزمائشیں ناگزیر ہیں۔صبرو استقامت کا ثبوت دے کر ہی ہم اللہ کی نظروں میں سرخرو ہو سکتے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار  مولانا محمد الیاس خان فلاحی،رکن آل انڈیا مسلم پرسنل لا بورڈ نے مجلس العلماء تحریک اسلامی مہاراشٹر کے ممبئی اورمضافات کے ارکان کے یک روزہ اجلاس منعقدہ بائیکلہ ممبئی میں ”بھارت کے موجودہ حالات اور علماء کرام کا مطلوبہ کردار“ کے عنوان پر کیا۔

مولا نا نے مزید کہا کہ علماء کرام وارثین انبیاء ہیں، صرف ملت اسلامیہ نہیں بلکہ ساری انسانیت ان کی مخاطب ہے۔ اسلام کا پیغام سارے انسانوں کے لئے ہے۔ علماء کا تعلق سارے انسانوں سے ہونا چاہئے۔ مساجد کو اسلام کا مراکز بنانا، ملت کی ضروریات کے لئے با صلاحیت افراد تیار کرنا، غلط رسوم و رواج کو ختم کرنا،ملت کو انتشار و اختلاف سے محفوظ رکھنا، مغربی کلچر اور ثقافت سے مسلم نو جوانوں کی حفاظت اور مسلم پرسنل لا پر ہونے والے اعتراضات کا مدلل جواب دینا علماء کی اہم ذمہ داریاں ہیں۔

اجلاس کا آغاز تذکیر بالقرآن سے ہوا۔اس کے بعد افتتاحی کلمات پیش کرتے ہوئے محمد نصیر اصلا حی، ناظم اعلیٰ، مجلس العلماء تحریک اسلامی مہاراشٹر کہاکہ وقتی،ہنگامی اور جزوی کاموں کے بجائے ہم مسلم معاشرہ کی اصلاح اور برادران ِوطن تک دین کا پیغام پہنچانے پر اپنی قوتیں صرف کریں۔

اجلاس میں ڈاکٹر سلیم خان، معاون امیر، جماعت اسلامی حلقہ مہاراشٹر،  نے ”مایوس تو نہیں ہیں طلوع سحر سے ہم“ کے عنوان پر اہم خطاب فرما یا۔ انہوں نے کہا کہ اہل ایمان کے لئے کبھی بھی مایوس ہونے کی کوئی وجہ نہیں ہے۔جو لوگ مایوس ہوتے ہیں وہ کوئی کام  نہیں کر سکتے۔ مایوسی سے حرکت و عمل چھن جاتی ہے۔ مایوس اور مرعوب ہوکر یہ ملت اپنے فرض منصبی کو ادا نہیں کر سکتی۔

آج ہمیں ڈرایا جا رہا ہے، خوف زدہ کیا جارہا اور باطل قوتوں کو بڑھا چڑھا کر پیش کیا جا رہا ہے۔ ہمارے لئے اصل قوت کی بنیاد اللہ کی ذات اور اس کی کتاب ہے۔ قرآن کا مطالعہ موجودہ واقعات اور حالات کے تناظر میں کرنا چاہئے۔ اس اجلاس میں ممبئی اور مضافات کے علماء کثیر تعداد میں ہوئے۔

Leave A Reply

Your email address will not be published.